اردو فتاوی جات

یہ کہہ کر زمین دی کہ گیہوں بوئے تو اتنا جَو بوئے تو اتنا تو کیا حکم ہے؟؛ بہار شریعت

مفتی امجد علی اعظمی رحمہ اللہ کی کتاب بہار شریعت سے ”یہ کہہ کر زمین دی کہ گیہوں بوئے تو اتنا جَو بوئے تو اتنا تو کیا حکم ہے؟" کے متعلق جواب اور ریفرنس

”یہ کہہ کر زمین دی کہ گیہوں بوئے تو اتنا جَو بوئے تو اتنا تو کیا حکم ہے؟“ اس مسئلہ کے متعلق مفتی امجد علی اعظمی رحمہ اللہ نے اپنی مشہور فقہی کتاب بہار شریعت (bahar e shariyat)، جلد 3، حصہ 15، صفحہ نمبر 292,293 پر موجود مسئلہ نمبر 14تا16 میں گفتگو فرمائی  ہے۔ کتاب کا صفحہ نمبر 292,293 اور مسئلہ نمبر 14تا16 نیچے مکمل دیا گیا ہے، جہاں سے آپ یہ مکمل مسئلہ پڑھ سکتے ہیں اور ضرورت پڑنے پر بآسانی اصل کتاب کا سکرین شاٹ لے کر بطور حوالہ  کسی کو سینڈ کر سکتے ہیں۔  اس  کے علاوہ آپ ہر صفحے پر موجود کتاب کے نام پر کلک کر کے کتاب کی فہرست بھی دیکھ سکتے ہیں اور فہرست پر موجود عنوانات پر  کلک کر کے اپنے مطلوبہ مقام پر بھی جا سکتے ہیں۔ یونہی آپ مکمل کتاب کو بھی ڈاونلوڈ کر سکتے ہیں۔

”یہ کہہ کر زمین دی کہ گیہوں بوئے تو اتنا جَو بوئے تو اتنا تو کیا حکم ہے؟“ مسئلہ کا مکمل ریفرنس:

محقیقین، مصنفین، محریرین اور تحقیقی مقالات لکھنے والوں کو اکثر مسائل کا حوالہ دینے کے لئے کتاب کے مکمل ریفرنس (حوالے) کی ضرورت پڑتی ہے۔ ان کی آسانی کے لئے اس مسئلے کا مکمل تفصیلی حوالہ بھی دیا جا رہا ہے۔

کتاب کا نام:           بہار شریعت (bahar e shariyat)

مصنف کا نام:        صدر الشریعہ مفتی محمد امجد علی اعظمی رحمہ اللہ

جلد نمبر:            3

حصہ نمبر:            15

صفحہ نمبر:            292,293

مسئلہ نمبر:            14تا16

تسہیل  و تخریج:                   المدینۃ العلمیہ  

ناشر:                  مکتبۃ المدینہ

مطبوع:              کراچی، پاکستان

 سن اشاعت:        30 جون 2008ء

ہمارے ساتھ تعاون کریں:

جیسا کہ آپ کو معلوم ہے کہ علمی و فقہی میدان میں علما اہلسنت کا کام الحمدللہ سب سے زیادہ ہے، لیکن افسوس کہ کتابوں سے پڑھنے کا ذوق کم ہوتا جا رہا ہے اور ہماری نوجوان نسل جدید دور کے تقاضوں کے مطابق علما اہلسنت بالخصوص مفتی محمد امجد علی اعظمی رحمہ اللہ  کے گراں قدر  کام کو انٹرنیٹ کی دنیا پر متعارف کروانے میں اب تک سستی کا شکار رہی ہے جس سے مخالفین کو پروپیگنڈا کرنے کا موقع ملا۔ بالخصوص بہار شریعت جیسا علمی و فقہی انسائیکلوپیڈیا وقت کی ایک اہم ضرورت ہے۔ لیکن انٹر نیٹ پر سرچ میں نہ آنے کے باعث اس کی علمی حیثیت و افادیت ابھی بھی کما حقہ واضح نہیں ہے۔ 

 لیکن اب بھی وقت ہے، اگر آپ بھی خدمت دین کا جذبہ رکھتے ہیں تو بہار شریعت (bahar e shariyat) سے استفادے کے شکریہ کے طور پر  اس مکمل مسئلہ ”یہ کہہ کر زمین دی کہ گیہوں بوئے تو اتنا جَو بوئے تو اتنا تو کیا حکم ہے؟“  کو نیچے دئیے گئے صفحے سے دیکھ کر کمینٹ سیکشن (تبصرہ) میں ٹائپ کر کے  مفتی امجد علی اعظمی رحمہ اللہ کی کتب کو نیٹ پرسرچ میں  لانے میں ہماری مدد کریں۔ یقین جانیے! آپ کا یہ دیا گیا کچھ وقت ضائع نہیں جائے گا بلکہ آپ کے لئے ثواب جاریہ اور مفتی محمد امجد علی اعظمی رحمہ اللہ کی شخصیت اور علمی کام کو جدید نسل تک پہنچانے میں ممد و معاون بنے  گا۔

بہار شریعت ، جلد 3، حصہ  15، صفحہ نمبر 292,293:

  • ایک اہم اور فائدہ مند کوشش یہ کی گئی ہے کہ کتاب آغاز سے کھلنے کی بجائے ڈائریکٹ مطلوبہ صفحے سے ہی شروع ہو تاکہ خود مطلوبہ صفحہ ڈھونڈنے اور نکالنے میں صرف ہونے والا وقت بچ سکے، البتہ اس خود کار نظام کے باعث کتاب کے کھلنے میں کچھ سیکنڈ کا وقت لگ سکتا ہے۔
  • خود کار نظام کے باعث کے باعث  ایک دو صفحات کا فرق ہو سکتا ہے۔  پیج سکرول کر کے اوپر دیا گیا صفحہ کتاب سے بآسانی نکالا جا سکتا ہے۔

غلطی کی اصلاح:

اوپر موجود مسئلہ کی ہیڈنگ یا حوالہ میں کسی قسم کی کوئی غلطی نظر آئے تو کمینٹ سیکشن  (تبصرہ)میں ضرور بتائیں۔ ان شاء اللہ اسے جلد از جلد ٹھیک کرنے کی کوشش کی جائے گی۔

مزید مسائل کی تلاش:

اگر آپ اس کے علاوہ کسی اور مسئلے کی تلاش میں ہیں تو بھی پریشان نہ ہوں الحمد للہ ہماری ویب سائٹ میں ”یہ کہہ کر زمین دی کہ گیہوں بوئے تو اتنا جَو بوئے تو اتنا تو کیا حکم ہے؟“ کے علاوہ بھی مختلف شرعی کتب کے  ہزاروں شرعی مسائل اور اسلامک آرٹیکلزموجود ہیں۔ اوپر دئیے گئے  سرچ بٹن پر کلک کریں اور اپنا مطلوبہ مسئلہ لکھ کر تلاش کریں۔

حوالہ جات:

Leave a Reply

Back to top button