شرعی سوالات

مسلمان کو خنزیر خریدنا گناہ ہے

سوال:

مسلمان کا غیر مسلم قرض خواہ سے خنزیر لے کر بیچنا کیسا؟ ملخصا

جواب:

اگر اس شخص نے خاکروب کے خنزیر اپنے مطالبہ میں اس سے خرید لیے تو گناہ کیا اور وہ بیع ناجائز ۔ اس پر توبہ لازم ۔ اور اگر خریدے نہیں مستقرض کو اس نے اس پر راضی کر لیا کہ سوئر بکوا کر اپنے مطالبہ کا روپیہ لے لے ، یا وہ سوئر لے گیا کہ انہیں بکوا کر اپنا روپیہ لے لے اور اس نے دوسرے کافر کو بیچنے کو کہا ، تو یہ صورت بھی شدید کراہت سے خالی نہیں ۔ خاکروب سوئر خود بیچے یا دوسرے خاکروب کو وہ وکیل کردے، اور وہ بیچے، اور اس کا مطالبہ کر دے، تو اس میں حرج نہیں۔ کافر حربی سے جو زیادہ ملے وہ سود نہیں اسے سود سمجھنا غلطی ہے۔

(فتاوی مفتی اعظم، جلد 5 ، صفحہ 71، شبیر برادرز لاہور)

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button