ARTICLES

قارن طواف کے چارچکرکے بعدوقوف کرے توباقی واجبات کب اداکرے ؟ اگرباقی واجبات طواف زیارت کے بعدکرے توکیاحکم ہوگا؟

الاستفتاء : کیافرماتے ہیں علماء دین ومفتیان شرع متین اس مسئلہ میں کہ ایک قارن نے طواف عمرہ کے چارچکرلگانے کے بعدوقوف عرفہ کرلیا،اب وہ بقیہ طواف عمرہ اورعمرہ کی سعی کب کرے ؟اگرطواف زیارت سے پہلے کاحکم ہے ،تواس کے خلاف کرنے یعنی طواف زیارت کے بعدکرنے پرشرعا کیالازم ہوگا؟ (السائل : صوفی اقبال ضیائی صاحب،مدینہ منورہ)

جواب

باسمہ تعالی وتقدس الجواب : صورت مسؤلہ میں وہ شخص بقیہ طواف عمرہ اورعمرہ کی سعی’’طواف زیارت ‘‘سے پہلے کرے ۔ چنانچہ علامہ علاءالدین حصکفی حنفی متوفی١٠٨٨ھ اورعلامہ سید محمد ابن عابدین شامی حنفی متوفی١٢٥٢ھ لکھتے ہیں : (فلو اتى باربعة اشواطٍ ولو بقصد القدوم اوالتطوع(…(لم تبطل)لانه اتى بركنها ولم يبق الا واجباتها من الاقل والسعي.بحر. قوله : (ويتمها يوم النحر )اي : قبل طواف الزيارة لباب۔( ) یعنی،اگرقارن نے (وقوف عرفہ سے قبل)چارچکرلگالئے ،اگرچہ طواف قدوم یانفلی طواف کے ارادے سے ،تواس کاقران باطل نہ ہوگا،کیونکہ اس نے عمرہ کے رکن کی ادائیگی کرلی ہے ،اوراب اس پرواجبات یعنی طواف عمرہ کے اقل چکراورسعی کے علاوہ کچھ باقی نہ رہا(بحرالرائق)اوروہ ان واجبات کی ادائیگی یوم نحریعنی طواف زیارت سے پہلے کرے گا(لباب)۔ علامہ رحمت اللہ سندھی حنفی متوفی٩٩٣ھ لکھتے ہیں : ولوطاف لھا اربعة اشواط لم یصر رافضا بالوقوف لانه اتى بالاکثر فبقی قارنا وعلیہ ان یتم بقیۃ الطواف یوم النحر۔( ) یعنی،اگرقارن نے طواف کے چارچکرلگائے ،تو’’وقوف عرفہ‘‘ کے سبب عمرہ کوچھوڑنے والانہیں ہوگا،کیونکہ وہ اکثرطواف عمرہ کی ادائیگی کرچکاہے ،لہذاوہ قارن باقی رہے گا،اوراس پرلازم ہے کہ وہ بقیہ طواف یوم نحرکومکمل کرے ۔ لیکن اگرکوئی ان واجبات کی ادائیگی سے قبل طواف زیارت اورحج کی سعی کرے گا،تواس کے تین چکرطواف عمرہ کی طرف پلٹ جائیں گے ،اور حج کی مکمل سعی’’عمرہ‘‘کی شمارہوجائی گی۔ چنانچہ علامہ رحمت اللہ سندھی حنفی لکھتے ہیں : لوطاف لعمرتہ اربعة اشواط ولم یسع لھا ثم طاف یوم النحر للزیارۃ وسعی فان ثلاثۃ اشواط تحول لعمرتہ وکذا سعیہ۔( ) یعنی،اگرقارن نے طواف عمرہ کے چارچکرلگائے اورعمرہ کی سعی نہیں کی تھی،پھریوم نحرطواف زیارت کیااورسعی کی،توبے شک تین چکرعمرہ کی طرف پلٹ جائیں گے ،اوریونہی اس کی سعی۔ اوراس صورت میں طواف زیارت کے تین چکرمزیدلگانے ہوں گے نیزحج کی مکمل سعی بھی کرے گا،کیونکہ طواف زیارت سے تین چکرعمرہ کی طرف پلٹ چکے ہیں ،اورحج کی مکمل سعی’’عمرہ‘‘ کی شمارہوچکی ہے ۔ واللہ تعالیٰ اعلم جمعہ،15جمادی الاولیٰ1441ھ۔10جنوری2020م

متعلقہ مضامین

Leave a Reply

Back to top button