ARTICLESشرعی سوالات

عورت کے حق میں حلق کروانا کیسا ہے ؟

استفتاء : ۔ کیا فرماتے ہیں علمائے دین و مفتیان شرع متین اس مسئلہ میں کہ عورت کے حق میں حلق کا کیا حکم ہے ؟

(السائل : ایک حاجی، مکہ مکرمہ)

جواب

باسمہ تعالیٰ وتقدس الجواب : عورت کے حق میں حلق مکروہ تحریمی ہے ، چنانچہ صاحبِ فتح القدیر کے شاگرد (235) علامہ رحمت اللہ سندھی حنفی کی ’’لباب‘‘ میں عبارت ’’بل واجبٌ لہنّ‘‘ یعنی بلکہ تقصیرعورتوں کے حق میں واجب ہے کے تحت ملا علی قاری حنفی متوفی 1014ھ لکھتے ہیں :

لکراہۃِ الحلقِ کراہۃ تحریمٍ فی حقِّہنّ (236)

یعنی، حلق عورتوں کے حق میں مکروہ تحریمی ہونے کی وجہ سے (اُن کے حق میں تقصیر واجب ہے ) اور حلق کو عورتوں کے حق میں مرد کے داڑھی منڈوانے کی طرح مُثلہ قرار دیا گیا جو کہ ممنوع ہے ، چنانچہ علامہ سید محمد امین ابن عابدین شامی متوفی 1252ھ لکھتے ہیں :

ہو مسنونٌ، و ہذا فی حقِّ الرَّجُلِ، و یکرہُ للمرأۃِ ، لأنَّہ مُثلَۃٌ فی حقِّہا کحلق الرَّجُل لحیتَہُ (237)

یعنی، حلق مرد کے حق میں افضل ہے اور عورت کے حق میں مکروہ (تحریمی) ہے کیونکہ وہ عورت کے حق میں مرد کے اپنی داڑھی مونڈھنے کی طرح مُثلہ ہے ۔ اور اگر صالح ضرورت کی وجہ سے ہو تو مکروہ نہیں جیسے کسی بیماری کے سبب سر کے بال پتھر کی مانند ہو جائیں جس کا واحد حل حلق ہی ہو تو اس صورت میں عورت کو حلق روا ہو گا، اسی لئے ملا علی قاری حنفی نے حلق کو عورتوں کے حق میں مکروہ تحریمی قرار دینے کے بعد لکھا :

إلاَّ لضرورۃٍ (238)

یعنی، مگر یہ کہ حلق کسی ضرورت کی وجہ سے ہو (تو مکروہ نہیں )۔

واللّٰہ تعالی أعلم بالصواب

یوم الأحد، 5 ذوالحجۃ1430ھ، 22 نوفمبر2009 م ،659-F

حوالہ جات

235۔ علامہ سید محمد امین ابن عابدین شامی نے تصریح کی ہے کہ صاحب لُباب علامہ رحمت اللہ بن قاضی عبد اللہ بن ابراہیم سندھی حنفی صاحب فتح القدیر امام کمال الدین محمد بن عبد الواحد ابن ہمام حنفی کے شاگرد تھے ، دیکھئے : ’’منحۃ الخالق علی البحر الرائق‘‘ (کتاب الحجّ، باب الإحرام، تحت قولہ : و طف مضطجعاً، 2/573)

236۔ المسلک المتقسط فی المنسک المتوسط، باب مناسک منیً، فصل فی الحلق و التّقصیر، ص324

237۔ رَدُّ المحتار علی الدُّرِّ المختار، کتاب الحجّ، فصل فی الإحرام و صفۃ المفرد بالحجّ، تحت قولہ : و حلقُہ أفضلُ

238۔ المسلک المتقسط فی المنسک المتوسط، باب مناسک منیً، فصل فی الحلق و التّقصیر، ص324

متعلقہ مضامین

Leave a Reply

Back to top button