ARTICLES

عورت کومکہ پہنچتے ہی حیض اجائے تو وہ عمرہ کب کرے ؟

الاستفتاء : کیا فرماتے ہیں علمائے دین ومفتیان شرع متین اس مسئلہ میں کہ اگر کوئی عورت حالت احرام میں عمرہ کے لئے جائے اوراسے مکہ مکرمہ پہنچتے ہی حیض اجائے تو وہ کیا کرے ؟

جواب

باسمہ تعالی وتقدس الجواب : صورت مسؤلہ میں وہ انتظار کرے یہاں تک کہ ماہواری ختم ہو،پھروہ غسل کرکے طواف عمرہ کرے ،کیونکہ طواف کے لئے طہارت واجب ہے ۔ چنانچہ علامہ رحمت اللہ سندھی حنفی متوفی٩٩٣ھ لکھتے ہیں : الطھارۃ عن الحدث الاکبر والاصغر۔( ) یعنی،(طواف میں )حدث اصغر اور حدث اکبر سے پاک ہونا(واجب ) ہے ۔ اورملا علی قاری حنفی متوفی١٠١٤ھ لکھتے ہیں : یجب فی الطواف : الطھارۃ عن الحدثین۔( ) یعنی،طواف میں حدث اصغر اور حدث اکبرسے پاک ہونا واجب ہے ۔ واللہ تعالیٰ اعلم یوم
الاحد،٢٣ذوالقعدۃ،١٤٤٠ھ۔٢٧جولائی٢٠١٩م

متعلقہ مضامین

Leave a Reply

Back to top button