شرعی سوالات

سوال: رمضان میںوترجماعت سے ہورہے تھے،امام وتروں کی تیسری رکعت میں تکبیر کہتے ہوئے رکوع میں چلا گیا، کسی نے لقمہ دیا تو امام اس کا لقمہ لے کر کھڑا ہوگیا ،دعائے قنوت پڑھی ،سجدہ سہو کیا ،کیا نماز ہوگئی؟

سوال: رمضان میںوترجماعت سے ہورہے تھے،امام وتروں کی تیسری رکعت میں تکبیر کہتے ہوئے رکوع میں چلا گیا، کسی نے لقمہ دیا تو امام اس کا لقمہ لے کر کھڑا ہوگیا ،دعائے قنوت پڑھی ،سجدہ سہو کیا ،کیا نماز ہوگئی؟

جواب:جو شخص قنوت بھول کر رکوع میں چلا جائے اسے جائز نہیں کہ پھر قنوت کی طرف پلٹے ۔۔۔تو جن مقتدیوں نے اسے اس عود ِ ناجائز(ناجائز لوٹنے) کی طرف بلانے کے لئے تکبیر کہی ان کی نماز فاسد ہوئی ……..اب کہ وہ ان مقتدیوں کے بتانے سے پلٹااور یہ نماز سے خارج تھے تو خود اس کی بھی نماز جاتی رہی اور اس کے سبب سب کی گئی۔

(فتاوی رضویہ،ج8،ص219،رضا فاؤنڈیشن،لاہور)

متعلقہ مضامین

Leave a Reply

Back to top button