شرعی سوالات

سوال:خلاف ترتیب پڑھنے سے نماز نہیں ہوتی،اس سے کیا مراد ہے؟

سوال:خلاف ترتیب پڑھنے سے نماز نہیں ہوتی،اس سے کیا مراد ہے؟

جواب: باوجود یاد اور گنجائش وقت کے وقتی نماز کی نسبت جوکہا گیا کہ نہ ہوگی اس سے مراد یہ ہے کہ وہ نماز موقوف ہے اگر وقتی پڑھتا گیا اور قضا رہنے دی تو جب دونوں مل کر چھ ہو جائیں گی یعنی چھٹی کا وقت ختم ہو جائے گا تو سب صحیح ہو گئیں اور اگر اس درمیان میں قضا پڑھ لی تو سب گئیں یعنی نفل ہوگئیں سب کو پھر سے پڑھے۔ (الدرالمختار، کتاب الصلاۃ، باب قضاء الفوائت،ج2، ص641)

متعلقہ مضامین

Leave a Reply

Back to top button