شرعی سوالات

سوال:تجدید ِایمان کا طریقہ بتا دیجئے۔

سوال:تجدید ِایمان کا طریقہ بتا دیجئے۔

جواب:جس کُفر سے توبہ مقصود ہے وہ اُسی وقْت مقبول ہو گی جبکہ وہ اُس کُفر کو کُفر تسلیم کرتا ہو اوردل میں اُس کُفر سے نفرت و بیزاری بھی ہو۔ جو کُفرسرزد ہوا توبہ میں اُس کاتذکِرہ بھی ہو ۔توبہ کے لیے یوں کہے:یااللہ عَزَّوَجَلَّ!میں نے جو فلاں کفر بولا ہے اِس کُفر سے توبہ کرتا ہوں۔ لَآ اِلٰہَ اِلَّااللہُ مُحَمَّد رَّسُوْلُ اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ والہ وسلَّم (اللہ عَزَّوَجَلَّ کے سوا کوئی عبادت کے لائق نہیں محمدصلی اللہ تعالیٰ علیہ والہ وسلَّم اللہ عَزَّوَجَلَّ کے رسول ہیں )،اِس طرح مخصوص کُفر سے توبہ بھی ہو گئی اور تجدیدِ ایمان بھی۔

اگرمَعَاذاللہ عَزَّوَجَلَّ کئی کُفرِیّات بکے ہوں اور یاد نہ ہو کہ کیا کیا بکا ہے تویوں کہے:یااللہ عَزَّوَجَلَّ!مجھ سے جو جو کُفرِیّات صادِر ہوئے ہیں میں ان سے توبہ کرتا ہوں،پھر کلِمہ پڑھ لے ۔ (اگر کلمہ شریف کا ترجَمہ معلوم ہے تو زَبان سے تر جَمہ دُہرانے کی حاجت نہیں )۔

اگریہ معلوم ہی نہیں کہ کُفر بکا بھی ہے یا نہیں تب بھی اگر احتیاطاً توبہ کرنا چاہیں تو اسطرح کہئے:یااللہ عَزَّوَجَلَّ!اگر مجھ سے کوئی کُفر ہو گیا ہو تو میں اُس سے توبہ کرتا ہوں ۔یہ کہنے کے بعد کلِمہ پڑھ لیجئے ۔

متعلقہ مضامین

Leave a Reply

Back to top button