شرعی سوالات

رجسٹری کے بغیر بیع مکمل ہو جاتی ہے

سوال:

عبدالمجید اور عبد الماجد دو حقیقی بھائیوں کا مشترکہ مکان تھا۔ عبدالمجید نے زبانی بیع کے ذریعے پنچوں کی موجودگی میں اپنے حصہ کا مالک عبدالمجید کو بنایا اور دو لاکھ ستر ہزار روپیہ قیمت بھی وصول کر لی ۔لیکن بعد میں رجسٹری کرنے سے انکار کر دیا۔ کہتا ہے کہ زبانی طور پر کہنے سے مکان بک نہیں  جا تا ہے ۔ چونکہ میں نے رجسٹری وغیرہ کسی قسم کی کوئی دستاویز تحریر نہیں کی ہے ۔اس لیے مکان میرا ہی ہے۔

کیا عبد الماجد کو شریعت اس بات کی اجازت دیتی ہے کہ مکان سے عبدالمجید کو بے دخل کر دے یا مکان کے عوض دی گئی رقم کو عرصہ دو سال کے بعد آج کی مالیت کے مطابق واپس لے سکتے ہیں؟

جواب:

جب شرعاً وہ مکان عبد الماجد کا ہو گیا تو اس کو اس پر قبضہ کرنے کا حق حاصل ہے۔ البتہ بیع فسخ کرنے کی صورت میں اس نے جتنی رقم قیمت میں دی تھی اس سے زائد وصول کر نانا جائز ہے۔

(فتاوی بحر العلوم، جلد4، صفحہ8، شبیر برادرز، لاہور)

متعلقہ مضامین

Leave a Reply

Back to top button