شرعی سوالات

رات کے وقت ناخن کاٹنا کیسا ہے؟

کیا فرماتے ہیں علماےدین و مفتیان شرع متین اس بارےمیں کہ رات کے وقت ناخن کاٹنا کیساہے؟

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم
الجواب بعون الوہاب اللہم ہدایۃالحق والصواب

 رات کے وقت ناخن کاٹنے میں کوئی حرج نہیں ہے ۔

فتاوی عالمگیری میں ہے”حکی أن ھارون الرشید سأل أبا یوسف (رحمہ اللہ تعالی) عن قص الأظافیر فی اللیل فقال ینبغی فقال ما الدلیل علی ذلک فقال قولہ علیہ السلام ”الخیر لا یؤخر ”کذا فی الغرائب’

ترجمہ:مروی ہے کہ ہارون الرشید نے امام ابو یوسف رحمہ اللہ سے رات کو ناخن کاٹنے کے بارے میں پوچھا تو آپ نے فرمایا:کاٹنا بہتر ہے۔ ہارون الرشید نے عرض کی ”اس پرکیا دلیل ہے؟” تو آپ نے فرمایا:نبی اکرم صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم کا یہ فرمان مبارک ” نیکی کو مؤخر نہ کرو۔”اسی طرح غرائب میں ہے۔

  (فتاوی عالمگیری ،جلد5،صفحہ358،اسلامی کتب خانہ ،لاہور)

    تفہیم المسائل میں ہے”رات کے وقت ناخن کاٹنے کی شرعاً کوئی ممانعت نہیں ہے۔”

                            (تفہیم المسائل،جلد1،صفحہ403،ضیاالقران پبلی کیشنز،لاہور)

                            واللہ اعلم ورسولہ عزوجل و صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم

متعلقہ مضامین

Leave a Reply

Back to top button