ARTICLES

حج کرنے کے بعد مدینہ طیبہ جا کر دوبارہ مکہ آنے والے کے طوافِ وداع کا حکم

استفتاء : ۔ کیا فرماتے ہیں علماء دین و مفتیان شرع متین اِس مسئلہ میں کہ طوافِ وداع کرنے کے بعد حاجی مدینہ منورہ چلا گیا ، اب وہ وطن واپسی آنے سے قبل مکہ مکرمہ گیا تاکہ عمرہ کر کے جائے تو اِس صورت میں اُسے دوبارہ طوافِ وداع کرنا واجب ہو گا یا واجب اس طوافِ وداع سے ادا ہو گیا جو اُس نے حج کے بعد مدینہ طیبہ جاتے وقت کیا تھا۔

(السائل : محمد عرفان ضیائی، کراچی)

جواب

باسمہ تعالیٰ وتقدس الجواب : صورت مسؤلہ میں اُسے دوبارہ طواف کرنا لازم نہیں کیونکہ طوافِ صدر عمرہ کرنے والے پر واجب نہیں ،آفاقی حاجی پر اس وقت واجب ہوتا ہے جب وہ مکہ مکرمہ سے نکلنے کا ارادہ کرے ، چنانچہ علامہ نظام الدین حنفی متوفی 1161ھ لکھتے ہیں :

و طواف الصدر، واجب علی الحاج إذا أراد الخروج من مکۃ فلیس علی المعتمر طواف الصدر و لا یجب علی أہل مکۃ و أہل المواقیت ومن دونہم، کذا فی ’’الإیضاح‘‘ ، ولا یجب علی الحائض و النفساء و لا علی فائت الحج، کذا فی ’’المحیط السرخسی‘‘ (397)

یعنی، طوافِ صدر حاجی پر اس وقت واجب ہے جب وہ مکہ معظمہ سے چلے جانے کا ارادہ کرے ، پس عمرہ کرنے والے پر، اہلِ مکہ پر اور اہلِ میقات اور میقات کے اندر رہنے والوں پر طوافِ صدر واجب نہیں ،اسی طرح ’’ایضاح‘‘ (398)میں ہے ۔ حیض والی اور نفاس والی عورت پر اور اس شخص پر جس کا حج فوت ہو گیا ہے طوافِ صدر واجب نہیں ، اِسی طرح ’’محیط سرخسی‘‘(399) میں ہے ۔ اور مخدوم محمد ہاشم ٹھٹھوی حنفی متوفی 1174ھ لکھتے ہیں :

سومِ طواف وداع است کہ آن را طوافِ صدر نیز گویند و صدر بفتحتین بمعنی رجوع است، و آن واجب است بر آفاقی کہ مفرد بحج باشد یا متمتع یا قارن ،نہ بر مفرد بعمرہ ،ونہ بر مکی و میقاتی (400)

یعنی، تیسرا طوافِ وداع ہے اور اسے طوافِ صَدَربھی کہتے ہیں اور صدر تحتین (صاد اور دال پر زبر سے ) بمعنی رُجوع (یعنی لوٹنا) ہے اور آفاقی (حاجی) پر واجب ہے مُفرد ہو یا قارن ہو یا متمتع، صرف عمرہ والے پر او رمکی اور میقاتی پر واجب نہیں ۔ البتہ رُخصت ہوتے وقت ہر ایک کے لئے اہتمام کے ساتھ آخری طواف کرنا مستحسن ہے اگرچہ عمرہ کرنے والے پریہ طواف واجب نہیں ہے ۔

واللّٰہ تعالی أعلم بالصواب

یوم الجمعۃ،25شوال المکرم 1427 ھ، 17نوفمبر 2006 م (248-F)

حوالہ جات

397۔ الفتاویٰ الھندیۃ، کتاب المناسک، الباب الخامس فی کیفیۃ أداء الحج، 1/234

398۔ الإیضاح

399۔ المحیط للسرخسی، کتاب الحج، باب طواف الصدر، ص240

400۔ حیاۃ القلوب فی زیارۃ المحبوب، باب سیوم ، در بیان طواف وانواع آن، فصل اول : در بیان انواع طواف، ص114

متعلقہ مضامین

Leave a Reply

Back to top button