ARTICLES

جدہ سے براستہ مکہ طائف جانے والے کے احرام کا حکم

استفتاء : ۔ کیا فرماتے ہیں علمائے دین و مفتیان شرع متین اس مسئلہ میں کہ جدہ سے طائف جانے کے لئے جو راستہ استعمال ہوتا ہے وہ حدود حرم سے ہو کر گزرتاہے ۔ جو شخص اس راستہ سے طائف جائے تو اس پر احرام لازم ہو گا یا نہیں ؟ جب کہ اس کا ارادہ طائف جانے کا ہے ۔

(السائل : محمد احمد ، جمشید روڈ، کراچی)

جواب

باسمہ تعالیٰ وتقدس الجواب : یاد رہے کہ جدہ میقات کے اندر حل واقع ہے ، اور حل میں رہنے والا بلا احرام مکہ مکرمہ اسکتا ہے جب کہ وہ حج و عمرہ کا ارادہ نہ رکھتا ہو۔ چنانچہ علامہ رحمت اللہ سندھی حنفی لکھتے ہیں :

و لھم دخول مکۃ بغیر احرامٍ اذا لم یریدوا نسکا والا فیجب (205)

یعنی، ان (اہل حل) کے لئے بلا احرام مکہ مکرمہ میں داخل ہونا جائز ہے جب وہ کسی نسک (حج و عمرہ) کا ارادہ نہ رکھتے ہوں ،ورنہ واجب ہے ۔ اور علامہ نظام حنفی متوفی 1161ھ اور علماء ہند کی ایک جماعت نے لکھا :

و من کان داخل المیقات کالبستانی لہ ان یدخل مکۃ لحاجۃٍ بلا احرامٍ الا اذا اراد النسک (206)

یعنی، اور جو شخص میقات کے اندر ہے جیسا کہ باغ والا تو اس کے لئے کسی کام کی غرض سے بلا احرام مکہ میں داخل ہونا جائز ہے مگر جب وہ نسک (یعنی حج یا عمرہ) کا ارادہ رکھتا ہو (تو احرام لازم ہو گا)۔ اور علامہ قاضی جمال الدین احمد بن محمود غزنوی حلبی حنفی متوفی 593ھ لکھتے ہیں :

و من کان اھلہ داخل المواقیت، جاز لہ دخول مکۃ بغیر احرام (207)

یعنی، جس کا گھر مواقیت کے اندر ہے ، اس کے لئے بلا احرام مکہ داخل ہونا جائز ہے ۔ لہٰذا جب جدہ رہنے والے کو حج یا عمرہ کے ارادے کے بغیر بلا احرام مکہ مکرمہ میں داخل ہونا جائز ہے تو حدود حرم سے گزرنا بطریق اولیٰ جائز ہوگا۔اس لئے اس شخص پر کوئی دم یا صدقہ اور کوئی گناہ لازم نہیں ہوگالیکن جب طائف سے جدہ واپسی میں اگراسی راستہ یعنی حدود حرم سے گزرے گا تواس پر احرام اور نسک لازم ہوجائے گا اس لئے کہ طائف میقات سے باہر ہے اور وہ حدود حرم سے گزر کر جدہ جارہاہے ۔

واللٰہ تعالی اعلم بالصواب

یوم الاحد، 2 رمضان المبارک 1433ھ، 22 یولیو 2012 م 798-F

حوالہ جات

205۔ لباب المناسک، باب المواقیت، فصل : فی الصنف الثانی، ص 79

206۔ الفتاوی الھندیۃ، کتاب المناسک، الباب الثانی : فی المواقیت، 1/221

207۔ الحاوی القدسی، کتاب الحج، باب الاحرام، فصل، 1/324

متعلقہ مضامین

Leave a Reply

یہ بھی پڑھیں:
Close
Back to top button