شرعی سوالات

امام کے پیچھے ثنا پڑھنا

 کیا فرماتے ہیں علماےدین و مفتیان شرع متین اس بارےمیں کہ اگر کوئی شخص امام کے ساتھ دوسری رکعت میں شامل ہوا تو وہ ثناء پڑ ھ سکتا ہے یا نہیں؟

بسم اللہ الرحمٰن الرحیم
الجواب بعون الوہاب اللہم ہدایۃالحق والصواب

اگر سری نماز میں امام قیام میں ہے تو پڑھے اور اگر امام جہرا قرات کر رہا ہے تو نہ پڑھے ،بعد میں جب اپنی بقیہ نماز ادا کرنے کے لئے کھڑا ہو اس وقت ثنا پڑھے۔

خلاصۃ الفتاوی میں ہے’‘المسبوق اذا ادرک الامام فی القراء ۃ فی الرکعۃ التی یجھر فیھا لایاتی بالثناء فاذا قام الی قضاء ماسبق بہ یاتی بالثنائ۔۔۔وفی صلوٰۃ المخافۃ یاتی بالثناء اذاادرکہ قائما”

ترجمہ: مسبوق جب امام کو جہری رکعت میں قرات میں پائے تو ثناء نہ پڑھے، پھر جب اپنی باقی نماز پڑھنے کے لیے کھڑا ہو تو ثناء پڑھے۔ ۔۔اور سری نماز میں جب امام کو قیام میں پائے تو ثناء پڑھے۔

                             (خلاصۃ الفتاوی،کتاب الصلوٰۃ،ج1،ص165،مطبوعہ کوئٹہ )

                        واللہ اعلم ورسولہ عزوجل و صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ واصحابہ وبارک وسلم

متعلقہ مضامین

Leave a Reply

Back to top button